نعت رسول مقبول

جون 12, 2007

نعت رسول مقبول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

 

شکیل احمد طاہر کی آواز میں

 

 


زمانے میں سب سے جدا ہو گیا ہوں

 


دریا پہ سمندر پیاسا تھا

 


سوہنٹرا آیا تے سج گئے نے گلیاں بازار

 


روک لیتی ہے آپ کی نسبت

 


زمین میلی نہیں ہوتی

 


کربل کی ہے یاد آئی

 


میرے آقا آؤ مدت ہوئی ہے

 


مر کے اپنی ہی اداؤں پہ امر ہو جاؤں

 


میرے قرار ہیں ہر بے قرار کے


حاضر ہیں تیرے دربار میں ہم


صدا گیت گاؤ حضور (ص) کے


قدموں میں بلا لیجئے


کربلا کی ہے یاد آئی


آؤ تسبیح صبح و شام کریں


میرے حضور بناؤ تو بات بنتی ہے


قصیدہ بردہ شریف

 

 

 

 

 

 

 

 

Advertisements